Quicklists
This content requires JavaScript and Macromedia Flash Player 7 or higher. Get Flash

New Noha 2019 I مُکالمہ (Mukalma) I Syeda Amber Naqvi | New Muharram Noha 1441H I 2019-20

azadarimarkaz

196 Views

Official Website: http://www.syamproduction.com follow us on facebook: Facebook: https://www.facebook.com/syamproduction follow us on youtube: Youtube: http://www.youtube.com/c/SyamProductionsOfficial Promoting Hussaini Mission #NewNoha #NewNohay #Muharram Presented By: Syam Productions IMPORTANT INFORMATION This video is protected under international copyright act. All Rights of audio & video are reserved by Syam Productions. بولے حُسینؑ وعدہ ءِ طفلی نِبھائوں گا دین ِ نبیؐ کو جان سے جا کر بچائوں گا عُنصر شفا کا خاک میں تیری سمائوں گا تیری زمیں کو عرش ِ معلی بنائوں گا کہہ کر یہ میرے دل کو نہ کر اور بھی بے چین للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے حُسینؑ بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے مولاؑ کاٹوں میں بات آپؑ کی میری مجال کیا لیکن میرے مولا یہاں پردا بھی چِھنے گا اور ساتھ میں ہیں آپؑ کے ماں بہنیں با پردا مولاؑ کہیں دُکھے نہ دل ِ ملکہ ءِ کونینؑ للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے حُسینؑ بولے حُسینؑ دین پے قربان ہے پردا منظور ہے سکینہؑ و زینبؑ کا بھی رونا لیکن خدا کا ذکر سلامت رہے سدا اے کرب و بلا بات کو میری سمجھ ذرا نہ کہہ کے تجھے واسطہ ءِ مادر ِ حسنینؑ للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے حُسینؑ یہ سُن کے بولی کرب و بلا اے میرے حُسینؑ مولاؑ میں چاہتی نہیں کہ آپؑ ہو بے چین یہ جائے قتل گاہ ہے یہ جا ہے جائے بین روئے اِسی زمین پے نبیوں کے قلب و نین روئیں نہ آپؑ ہو نہ کہیں یاں یہ شُور و شین للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے حُسینؑ بولے حُسینؑ آنسو میرا کچھ بھی نہیں ہے جو کچھ بھی ہے خدا ہے خدا ہی کا یقیں ہے یہ جاں بھی اُسی کی وہی اِس کا اٙمیں ہے آرام گاہ میری یہی تیری زمیں ہے مجھ سے نہ اب یہ کہیو کہ اے فاطمہؑ کے چین للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے حُسینؑ آخر زمیں کرب و بلا تھک کے رہ گئ مانے نہیں حُسینؑ تو بس روتی ہی رہی اور ایک روز ایسا ہوا خون میں ڈوبی خوں رنگ جب ہوئ تو صدا آتی تھی یہی کہتی تھی نہ میں جائے لہو ہے یہ جائے بین للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے حُسینؑ پھیلی صدائے نوحہ اے عنبر یہ کُو بہ کُو سُن کر حُسین و کرب و بلا کی یہ گُفتگو آنکھوں میں حاوی اعظمی بھرنے لگے آنسو خون ِ جگر سے کرنے لگا چہرا یہ وُضو سُن کر یہ نوحہ بھر گئے خون ِ جگر سے نین للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین بولی زمین ِ کرب و بلا اے میرے حُسینؑ للہ یاں سے جائیے کہ جا ہے یہ بے چین شکر ِ مولاؑ

  • CategoryNohay
  • Duration: 04:39
  • Date:  1 year ago
  • Tags:   no-tag

Please select playlist name from following

Report Video

Please select the category that most closely reflects your concern about the video, so that we can review it and determine whether it violates our Community Guidelines or isn’t appropriate for all viewers. Abusing this feature is also a violation of the Community Guidelines, so don’t do it.

0 Comments