Quicklists
This content requires JavaScript and Macromedia Flash Player 7 or higher. Get Flash

Nohay 2019 | Hai Apni Sakina Ka Abbas Ko Ghum | Syed Raza Abbas Zaidi | Mola Abbas New Noha 2019

Nohay 2019 | Hai Apni Sakina Ka Abbas Ko Ghum | Syed Raza Abbas Zaidi | Mola Abbas New Noha 2019 ------------------------------------------------------ Kalam Title | Hai Apni Sakina Ka Abbas Ko Ghum Recited By | Syed Raza Abbas Zaidi Poetry By | Janab Husnain Akbar Composition, Concept and Arrangemant | Raza Shah Volume | Album 14th/2019 20 Chorus By | Rajab Ali Khan , Amanat Ali Khan , Ghulam Abbas Video | Tna Production Ali Arman Label | RAZ Records Cover Design By | Qasim Zaidi Audio Recorded & Master/Mixing | ODS Studio --------------------------------------------- #HaiApniSakinaKaAbbasKoGhum #Nohay2019 #SyedRazaAbbasZaidi --------------------------------------------- On the arrival of Muharram Many Condolences to Prophet Muhammad (Saww) and Hazrat Fatima Zahra (as) and Especially to Imam e Zamana (AJF) -------------------------------------------- Follow US On Our Social Media Channels: "Official Website" https://www.razaabbas.com "Follow on Facebook" https://www.facebook.com/SyedRazaAbbasZaidiOfficial "Subscribe Youtube Channel" https://www.youtube.com/c/syedrazaabbaszaidi "Follow on Instagram" https://www.instagram.com/syedrazaabbaszaidi "Follow on Twitter" https://twitter.com/razaabbaszaidi "Follow on SoundCloud" https://soundcloud.com/syedrazaabbaszaidiofficial ------------------------------------------- NOHA LYRICS ہے اپنی سکینہ کا عباس ع کو غم مولا ع پیاسی رہی شہزادئ اور مرتے ہیں ہم مولا ع خاتونِ جناں س نے یوں گرنے سے بچایا ہے رہوار سے بی بی س نے خود مجھ کو اتارا ہے ہیں خاک پہ بی بی س کے یہ نقشِ قدم مولا ع ریتی پہ تیرا خدام پیروں کو رگڑتا ہے ہیں زخم لگے اتنے خوں جسم سے بہتا ہے رک رک کے نکلتا ہے اب سینے سے دم مولا ع تشریف جو لائیں ہیں تعظیم کو اٹھ جاتا سر اپنا جھکا کر میں آداب بجا لاتا اٹھنے سے بھی قاصر ہوں بازو ہیں قلم مولا ع مقتل میں پڑا رہنے دیجیے گا مرا لاشہ عباس ع کی غیرت کو برداشت نہیں گا میت پہ مری روئیں اب اہلِ حرم مولا ع جاتے ہوئے حسرت ہے یہ آپ کے خادم کو بس ثانیءِ زہرا س کے خیمے کی زیارت ہو رُخ پھیر دیں اُس جانب اب وقت ہے کم مولا ع میں آپ کے چہرے کو دیکھوں تو بھلا کیسے اک تیر سے زخمی ہے اک آنکھ ہے تر خوں سے یہ تیر ھٹا دیں تو ہو جائے کرم مولا ع چھنتےہوئے بی بی س کے دکھتے ہیں گہر مجھکو روتی ہوئی آتی ہے معصومہ س نظر مجھکو کس طرح سے جھیلے گی وہ رنج والم مولا ع آتی ہے صدا کوئی بڑھتی ہے پریشانی جیسے کہ کوئی بچی کہتی ہو چچا پانی ہے موت سے بڑھ کر یہ زہرا س کی قسم مولا ع عباس ع کے خیمے میں مولا ع نے علم رکھ کے کاٹی ہیں طنابیں یوں اکبر کہ ابھی جیسے دفناتے ہیں غازی ع کی حسرت میں علم مولا ع

  • CategoryNohay
  • Duration: 10:10
  • Date:  2 weeks ago
  • Tags:   no-tag

Please select playlist name from following

Report Video

Please select the category that most closely reflects your concern about the video, so that we can review it and determine whether it violates our Community Guidelines or isn’t appropriate for all viewers. Abusing this feature is also a violation of the Community Guidelines, so don’t do it.

0 Comments